Aisi Ki Taisi By Rimsha Hussain

 

 Novel : Aisi Ki Taisi Complete Novel
Writer Name :  Rimsha Hussain
Category : Army & Suspense Based Novel

Rimsha Hussain is the author of the book Aisi Ki Taisi Pdf. It is an excellent ,army based urdu novels,Suspense,cousin marriage based novels,secret agent based,funny romantic urdu novels,
Mania team has started  a journey for all social media writers to publish their Novels and short stories. Welcome To All The Writers, Test your writing abilities.

They write romantic novels, forced marriage, hero police officer based Urdu novel, suspense novels, best romantic novels in Urdu , romantic Urdu novels , romantic novels in Urdu pdf , Bold romantic Urdu novels , Urdu , romantic stories , Urdu novel online , best romantic novels in Urdu , romantic Urdu novels romantic novels in Urdu pdf, Khoon bha based , revenge based , rude hero , kidnapping based , second marriage based, social romantic Urdu, Aisi Ki Taisi Novel Complete by Rimsha Hussain is available here to 

یہاں
اکیلے کب تک رہو گے؟میرے ساتھ چلو اے زی کو رہا بھی کروائے گے اور تم اپنی ماں کی
موت کا بدلا بھی لینا۔۔۔۔اصغر زاویار کے کمرے میں آتا اُس سے بولا جو جاناں کی
انگھوٹی چین میں ڈال رہا تھا۔۔۔۔۔پاس ہی اُس کے ڈرائینگ کا سامان تھا۔۔۔ یہ بھابھی
کا چہرہ بنایا ہے؟اصغر ایک کاغذ اُٹھانے لگا جب زاویار سارے کاغذات فولڈ کرنے لگا
اُس کے تاثرات سپاٹ ہر احساس سے عاری تھے۔۔۔اُس کو دیکھ کر اصغر نے گہری سانس خارج
پھر اپنی جیب سے ریوالر نکالا یہ پکڑو۔۔۔۔۔۔.اصغر زاویار کے ہاتھ سے پینسل لیتا
ریوالر پکڑانے لگا تو زاویار کی آنکھوں میں طنز تاثرات اُبھرنے لگے۔۔۔۔۔ میرے ساتھ
پاکستان چلو تمہارے باپ کے دُشمن کا پتا ہے مجھے اُس کو شوٹ کرکے اپنا بدلا
لینا۔۔۔بھابھی جی کے ساتھ جو ہوا اُس میں بھی ان لوگوں کا ہاتھ ہے۔۔۔۔اصغر اُس کے
اندر بدلے کی آگ بھڑکانے لگا۔۔۔۔۔
How many bullets are in it۔? کتنی گولیاں ہے اِس
میں؟زاویار ریوالر کو ہر اینگل سے دیکھتا سرسری لہجے میں اُس سے استفسار ہوا چھے
کی چھے گولیاں ہیں۔۔۔۔۔پاکستان کی ٹکٹس میں نے کنفرم کروا لی ہیں تم بس چلنے کی
تیاری کرو۔۔۔۔۔اصغر کو لگا جیسے وہ اپنے مقصد میں کامیاب ہوگیا ہو۔۔۔اُس کی سوچو
سے بے نیاز زاویار نے ٹریگر پہ ہاتھ رکھ کر ریوار اصغر پہ تانی۔۔۔۔ یہ۔۔۔۔۔۔۔کیا۔۔۔۔۔کررہے۔۔۔۔۔ہو۔۔۔اِس
کو نیچے کرو۔۔۔۔اصغر ہکلاکر بولا وہی جو تم نے کیا تھا۔۔۔زاویار بے تاثر لہجے میں
بتانے لگا۔۔ اِس کو نیچے کرو میں نے کجھ نہیں کیا۔۔۔اصغر نے جلدی سے کہا جو تم نے
کیا ہے اُس کی سزا تو ملے گی۔۔۔میرے ہوتے ہوئے تم نے میری ماں کا قتل کیا تو یہ
کیسے سوچ لیا ہے زی تمہیں زندہ چھوڑدے گا۔۔۔۔۔۔ ٹھاہ۔۔۔۔۔ آآآہ ہ اپنی بات کہتے ہی
زاویار نے سیدھا اُس کے بائیں گُھٹنے پہ گولی ماری جس پہ اصغر درد سے بُلبُلا
اُٹھا یہ۔۔۔کیا۔۔۔۔اصغر اپنے گُھٹنے پہ ہاتھ رکھتا نیچے بیٹھتا چلاگیا تمہاری
چیخیں سُننی ہے مجھے آسان موت نہیں دوں گا میں۔۔۔۔۔۔ ٹھاہ۔۔۔۔۔ آآآآآہ ہ۔۔۔۔ کہتے
ہیں زاویار نے اِس بار اُس کے دائیں بازوں پہ گولی ماری۔۔۔جس سے خون کا فوارہ نکلا
تھا.۔۔تکلیف کی شدت پہ اصغر کا پورا چہرہ سرخ ہوگیا تھا۔۔ اُس کی چیخوں پہ زاویار
کے بے سکون دل کو تھوڑا قرار سا مل گیا۔۔۔۔ بچہ بچہ۔۔ مجھے بچہ سمجھ لیا اگر میں
اتنا ہی بچہ نظر آتا ہوں تو یہ کیوں نہیں سوچا وہ بچہ اپنی ماں کے بغیر کیسے رہے
گا۔۔۔ ؟زاویار نے جس گُھٹنے پہ اُس کو گولی ماری تھی وہی اپنا پاؤں رکھ کر اُس پہ
دباؤ ڈال کر چیخ کر بولا د۔۔۔۔۔رد. ۔۔ہورہا۔۔۔۔۔۔۔۔۔اصغر ہانپتے بولا اپنی آنکھوں
کو بڑی مشکل سے اُس نے کھولا تھا۔۔ میری موم کو بھی ہوا ہوگا۔۔چیخیں وہ خوشی سے
نہیں ماررہی تھی۔۔۔مجھے بھی تکلیف ہوئی تھی جب اپنی ماں کو نیوڈ کو دیکھا
تھا۔۔۔۔۔زاویار اب اُس کے بازوں پہ دباؤ دینے لگا تو اصغر کی چیخوں میں روانگی
آگئ۔۔۔ چیخو چِلاؤ۔۔۔ میں تمہاری یہ چیخیں ہی سُننا چاہتا ہوں اور خبردار جو تم
بیہوش ہوئے۔۔۔۔ زاویار پانی کا جگ اُٹھاکر اُس پہ انڈیلتا وارننگ دینے لگا۔۔۔۔مگر
اِس بار اصغر کی آنکھیں بند ہورہی تھی تو زاویار نے دوسرے گُھٹنے پہ بھی شوٹ کردیا
تو اُس کی دلخراش چیخیں پوری گھر میں گونجی تھی۔۔۔۔

  • Download in pdf form and online reading.
  • Click on the link given below to Free download 1135 Pages Pdf
  • It’s Free Download Link

Media Fire Download Link

Click Now 


$ads={1}
Download From Google Drive

$ads={2}

ناول پڑھنے کے بعد ویب کومنٹس باکس میں اپنا تبصرہ پوسٹ کریں اور بتائیے آپ کو ناول کیسا لگا ۔ شکریہ

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *