Wo Safar Jo Tere Naam Tha By Hoor Bano

 

Novel : Wo Safar Jo Tere Naam Tha Complete Novel
Writer Name : Hoor Bano
Category : Romance Based Novel

Hoor Bano is the author of the book Wo Safar Jo Tere Naam Tha Pdf. It is an excellent social,rude hero based novels,romantic urdu novels,revenge based urdu novels,

Mania team has started  a journey for all social media writers to publish their Novels and short stories. Welcome To All The Writers, Test your writing abilities.
They write romantic novels, forced marriage, hero police officer based Urdu novel, suspense novels, best romantic novels in Urdu , romantic Urdu novels , romantic novels in Urdu pdf , Bold romantic Urdu novels , Urdu , romantic stories , Urdu novel online , best romantic novels in Urdu , romantic Urdu novels
romantic novels in Urdu pdf, Khoon bha based , revenge based , rude hero , kidnapping based , second marriage based, social romantic Urdu,
Wo Safar Jo Tere Naam Tha Novel Complete by Hoor Bano is available here to 

یارم بس کرو!! وہ اُس کے ہاتھوں کو اپنے سَر سے
ہٹاتا ہوا بولا۔۔۔ اب ٹھیک ہے آپ کے سَر کا درد!!! وہ اُس کے پاس آ کر بیٹھ گئی
۔۔۔ تمہیں میری فکر کرنے کی ضرورت نہیں ہے!! مس یارم فکر کرنی پڑتی ہے آپ میرے
شوہر ہیں ۔۔۔میرا فرض بنتا ہے کہ آپ کا خیال رکھوں ۔۔ خیال اور تمہیں؟؟ وہ بھی
میرا!! سیریسلی ۔۔۔ اب یہ انگریزی کا لفظ استعمال کرنے کی تو کوئی ضرورت نہیں تھی
آپ کو!!! اور جہاں تک رہے خیال کی بات۔۔۔تو مجھے آپ کا خیال خود سے زیادہ ہے
!!! پر مجھے تم سے شدید نفرت ہے ۔۔سمجھی تم!!! کوئی بات نہیں ہے ۔اب لازمی تو نہیں ہے کہ اس بڑی سی دنیا میں
انسان کو ہر کوئی پسند آۓ۔۔۔۔ویسے مجھے بھی آپ کچھ خاص پسند نہیں ہیں!! یارم ماہر
کی غصے سے بھری آنکھوں میں دیکھتی ہوئی بولی۔۔۔۔ ویسے آپ کی یہ غصے سے بھری لال
آنکھوں سے مجھے ڈر نہیں لگتا۔۔۔۔شاید اب مجھے ان آنکھوں کی عادت ہو گئی ہے ۔۔۔۔۔ ماہر
میں اپنی زندگی کا سفر آپ کے نام کرنا چَاہتی ہوں ۔۔۔میں تھک گئی ہوں یہ ان چاہی
جنگ لڑتے لڑتے۔۔۔۔ خود کو اُس سفر کا حصہ مت بناؤ جس کی کوئی منزل نا
ہو۔۔۔۔۔۔۔ہمارے سفر کی کوئی منزل نہیں ہے ۔۔۔۔کوئی ٹھکانہ نہیں ہے ۔۔۔وہ کہتا ہوا
اپنا چہرہ دوسری طرف موڑ چکا تھا ۔۔۔ لائٹ آف کرو مجھے نیند آ رہی ہے ۔۔۔ماہر نے
کہتے ہوئے آنکھیں بند کیں۔۔۔۔ یارم بھی آ کر لیٹ گئی تھی۔۔
 

  • Download in pdf form and online reading.
  • Click on the link given below to Free download 197 Pages Pdf
  • It’s Free Download Link


Media Fire Download Link

Click Now 


$ads={1}
Online Reading

$ads={2}


ناول پڑھنے کے بعد ویب کومنٹس باکس میں اپنا تبصرہ پوسٹ کریں اور بتائیے آپ کو ناول کیسا لگا ۔ شکریہ

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *