Dil E Nadaan By Almer Ejaaz

Novel : Dil E Nadaan
Writer Name : Almer Ejaaz
Mania team has started  a journey for all social media writers to publish their Novels and short stories. Welcome To All The Writers, Test your writing abilities.
They write romantic novels, forced marriage, hero police officer based Urdu novel, suspense novels, best romantic novels in Urdu , romantic Urdu novels , romantic novels in Urdu pdf , full romantic Urdu novels , Urdu , romantic stories , Urdu novel online , best romantic novels in Urdu , romantic Urdu novels
romantic novels in Urdu pdf, Khoon bha based , revenge based , rude hero , kidnapping based , second marriage based,
Dil E Nadaan Novel Complete by 
Almer Ejaaz is available here to download in pdf form and online reading.

$ads={2}
 

شہریار نے جیسے ہی کمرے میں قدم رکھا تو منھی تو بیڈ پر روتے
پایا .. اس نے کب منھیٰ کو روتا ہوا دیکھنا سوچا تھا .. منھیٰ میری جان
میں نہیں ہوں آپ کو میری کوئی فکر نہیں میں آپ پر زربردستی
مسلط کی گئ ہوں ….روتے ہوۓ کہا گیا
.. اوہو … کس نے کہہ دیا ہے منھی ادھر میری طرف دیکھیں .. شہریار نیچھے زمیں پر بیٹھ گیا .. اب بس میری سنیں گی آپمیں شہریار اپنے پورے ہوش میں اپنی محبت کا قرار کرتا ہوں
نکاح کے وقت جو بھی شاہ نے ڈرامہ لگایا . میں نے اس وقت آپ کو دل سے قبول کیا
..کیونکہ میں آپ سے بہت محبت کرتا ہوں اور آپ کو پہلی دفعہ دیکھا . تو دل ہار
بیٹھا تھا .. اب بھی کوئی شک میری محبت کا

ہریار نے سوال کیا .. تو منھی بھی خاموشی سے اد
کے سامنے گھٹنوں کے بل بیٹھ گئ
.. شہریار نوید آج منھیٰ شہریار اپنی محبت کا قرار کرتی ہے بےشک
نکاح سے پہلے کوئی مجھے فکر نا تھی مگر میں نکاح کے بعد سے دل و جان سے آپ دے اپنی
محبت کا قرار کرتی ہوں یہ کہتے ساتھ ہی منھیٰ اس کے سینے سے لگ گئ
میری جان کیا پوری رات اب زمیں پر ہی گزارنے کا ارادہ ہے
شہریار کے کہنے پر منھیٰ کہلکہلا کر ہنسی تو شہریار نے جان نثار نظروں سے اسے
دیکھا اور محبت اور عقیدت سے اس کے ماتھے پر لب رکھ دیے

میری جان یہ فل بڑا نادان ہے اور آپ کی باری
میں زیادہ ہی نادانی کر جاتا ہے منھیٰ کے سرخ چہرے کو دیکھ کر شہریار نے کہا
.

Click on the link given below to Free download Pdf
It’s Free Download Link

Media Fire Download Link

Click Now 


$ads={1}

ONLINE READING


Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *