Suno Na Sangemarmar Complete Novel By Hina Asad

 

 Novel : Suno Na Sangemarmar Complete Novel
Writer Name :  Hina Asad
Category :  Romance & Forced Marriage Based Novel

Hina Asad is the author of the book Suno Na Sangemarmar Pdf. It is an excellent social,, Romantic love story,forced marriage urdu novels,age difference urdu novels,army based urdu novels, based novels,

Mania team has started  a journey for all social media writers to publish their Novels and short stories. Welcome To All The Writers, Test your writing abilities.
They write romantic novels, forced marriage, hero police officer based Urdu novel, suspense novels, best romantic novels in Urdu , romantic Urdu novels , romantic novels in Urdu pdf , Bold romantic Urdu novels , Urdu , romantic stories , Urdu novel online , best romantic novels in Urdu , romantic Urdu novels
romantic novels in Urdu pdf, Khoon bha based , revenge based , rude hero , kidnapping based , second marriage based, social romantic Urdu,
Suno Na Sangemarmar Novel Complete by 
Hina Asad is available here to 

تت تم دور رہو مجھ سے ۔۔وہ اس کی آنکھوں میں جذبات کا ٹھاٹھیں مارتا
ہوا سمندر آباد دیکھ کر اس کی گرفت میں مچلتی بولی تھی
بہت ہوچکا دور دور رہنے کا کھیل ۔اب تو ملن کی
گھڑیاں ہیں محترمہ !!! ۔۔

تت تم سمجھتے
کیا ہوخود کو ؟؟؟جب جی چاہا چھوڑ کر چلے گئے پلٹ کر خبر نہیں لی ۔۔۔اب اپنا دل کیا
تو آگئے منہ اٹھا کر ۔۔۔۔اور اپنے یہ دانت اندر رکھو ورنہ توڑ دوں گی ۔۔۔سخت زہر
لگ رہے ہو اس وقت تم مجھے یوں ہنستے ہوئے ۔۔
اس کی سرخ آنکھوں میں اپنی سرخ آنکھیں گاڑے وہ
غصے سے بولی تھی جبکہ اب ھاد نے اسے بیڈ پر لٹایا اور اس کے دونوں بازو اوپر کرکے
مزید جھک کر اس کی راہ فرار کے راستے بند کر چکا تھا ھادیہ بری طرح اس کی گرفت میں
پھڑپھڑاتی بے حال ہو رہی تھی

جھوٹ بولتی ہو ۔۔۔میں جانتا ہوں ہر حال میں
تمہیں میں اچھا لگتا ہوں ۔ چاہے دانت توڑو یا سب کچھ توڑ دو آج تو میں اپنا پینڈنگ
کام پورا کر کہ ہی رہوں گا ۔۔

وہ جس پختہ اور ذومعنی انداز میں بول رہا تھا
ھادیہ کی جان ہوا ہونے لگی مزید اس کی قربت اسے بے حال کر رہی تھی
ھاد تم ایسا کچھ نہیں کرو گے ۔۔ ” “اگر ایسا ویسا کچھ کیا نا تو ۔۔۔۔ تو کیا بلوچن سائیں؟؟؟!!!! ۔۔ وہ ابرو اچکا کر
بولا ۔۔۔
تو۔۔۔تو ۔۔۔۔اسے سمجھ نہیں آئی کہ ایسے میں وہ
کیا بولے اسے اپنے لبوں پہ میٹھی سی درد محسوس ہوئی تو اس نے انگلی رکھ کر دیکھا
تو خون کی ننھی سی بوند تھی نظر آئی ۔۔۔
تو۔۔۔۔تو میں تمہارا خون پی جاؤں گی
۔۔۔۔”وہ خونخوار نظروں سے اسے دیکھتے ہوئے دبی دبی آواز میں غرائی۔۔۔
تو پی لو نا روکا کس نے ہے ؟؟؟ لیکن بالکل میری
طرح ۔۔۔۔بلکہ آؤ نا مل کر ایک دوسرے کا خون پی لیتے ہیں ۔ وہ اسکے چہرے کو اپنے
ہاتھوں کے پیالوں میں بھر کر شرارت آمیز انداز میں بولا ۔۔۔

Download in pdf form and online reading.
Click on the link given below to Free download 964 Pages Pdf
It’s Free Download Link


Media Fire Download Link

Click Now 


$ads={1}
Online Reading

$ads={2}

ناول پڑھنے کے بعد ویب کومنٹس باکس میں اپنا تبصرہ پوسٹ کریں اور بتائیے آپ کو ناول کیسا لگا ۔ شکریہ

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *